Follow by Email

Thursday, 24 April 2014





 کسی   کے  عشق  میں  برباد  ہونا 
ہمیں   آیا     نہیں      فرہاد     ہونا

محبّت   کا سبق   آساں   لگے   ہے 
بہت   مشکل   ہے   لیکن یاد  ہونا

بہت   پیاری  ہے  آزادی کی  چاہت
مگر    اچھا     نہیں   آزاد     ہونا

ہمیں   دیکھو  ہمارے آنسوؤں میں 
عجب    سا   ہے   ہمارا  شاد  ہونا 

وہاں  بھی  پھوٹ کر  رونا پڑا  ہے
جہاں  ممکن  نہ   تھا   ناشاد  ہونا


کئی    باتیں    بھلا    دینا  ہی  بہتر
 ضروری  تو  نہیں   سب   یاد  ہونا 

کوئی  تعمیر  کی  صورت  تو  نکلے
  ہمیں   منظو    ر ہے    بنیاد    ہونا   

   بناتا    ہے  سفر    کو    خوبصورت    
مسافت     کی    کوئی   میعاد   ہونا
منش شکلا


No comments:

Post a Comment